پردہ بکارت Hymenoplasty

November 24, 2012

عام طور پر ،کنوارہ پن کو پردہ بکارت کے سالم ہونے سے منسلک کیا جاتا ہے۔پردہ بکارت ایک باریک جِھلّی ہوتی ہے جو فُرج کی دیواروں کے درمیان تنی ہوئی ہوتی ہے اور اِس کے بیچ میں ایک چھوٹاسوراخ ہوتا ہے۔جنسی ملاپ کے نتیجے میں اِس پردہ بکارت کے پھٹ جانے کو ،عام طور پر کنوارہ پن ختم ہوجاناکہا جاتا ہے۔اور اِس کے پھٹ جانے سے جنسی ملاپ کے بعد کچھ خون آتا ہے۔یہ بات جاننا بھی اہم ہے کہ چند عورتوں میں ،پردہ بکارت کی جِھلّی اِس قدر لچک دار ہوتی ہے اور اِس کا سوراخ اتنا بڑا ہوتا ہے کہ اِس میں سے عضو تناسل آسانی سے فُرج میں داخل ہوجاتا ہے اور ایسی صورت میں پردہ بکارت پھٹتا نہیں ہے۔

ایک بار پردہ بکارت کے پھٹ جانے اور کنوارہ پن ختم ہوجانے کے بعد کسی بھی طبّی طریقے سے اِس عمل کو پلٹایا نہیں جا سکتا ۔البتّہ یہ عمل ایک بہت ماہرانہ آپریشن کے ذریعے کیا جاسکتا ہے ۔اِس آپریشن کو ہائیمینو پلاسٹی (hymenoplasty)کہا جاتا ہے

 

خواتین سے متعلقہ

فرج کے دہانے کو ڈھکنے والی باریک جھلی پردہ بکارت کہلاتی ہے۔ یہ جھلی عموما شب عروسی کے موقع پر پہلی مباشرت کے دوران ختم ہو جاتی ہے اور اس کے زائل ہونے پر معمولی خون بھی نکلتا ہے۔

اسے عموما کنوارپن کی علامت سمجھا جاتا ہے، جبکہ عین ممکن ہے کہ یہ بچپن میں ہی کھیلتے ہوئے اچھل کود کے دوران ختم ہو جائے۔ دوسری طرف یہ بھی ممکن ہے کہ یہ آسانی سے زائل نہ ہو اور اسے زائل کرنے کے لئے تھوڑا تردد کرنا پڑے

Post Your Comments Here